صائمہ اشرف
ہم سب دوسروں کی توجہ کیوں چاہتے ہیں ؟ہم کیوں چاہتے ہیں کہ سامنے والا ہم سے متاثر ہو؟ ایسی کیاتشنگی ہے ؟ کس چیز کی تسکین چاہتے ہیں؟ سامنے والا متاثر ہو یا نا ہو ہمیں کیا فرق پڑے گا؟جیسے ہی گھر

سے قدم باہر نکالتے ہیں فورآ سے پیشتر ہم سب اپنے اوپر ایک اچھا لبادہ چڑھا لیتے ہیں آپ اسے آسان زبان میں اچھا get-up یا اچھا بننے کا ڈھونگ بھی کہہ سکتے ہیں ۔ اگر اس مصنوعی کوشش کی بجائے ہم حقیقت میں اپنے آپ کو اچھا بنانے کی کوشش کریں تو یقین جانیے کہ ہمارے اور دنیا کےآدھے سے زیادہ مسائل ختم ہو جا ئیں ۔ کیوںکہ جب بھرم کھولنے کی بجائے بھرم رکھا جائے تو با ت سہل اور آدھی رہ جاتی ہے۔ :
انکے کرموں کا میں نے بھرم رکھا
انکے مزاجوں پر انداز نرم رکھا