ممبئی ( نیوز رپورٹ ) اپنی اداکاری اور کسی بھی ایشو پر ڈٹ کر بلا خوف و خطر بولنے میں مشہور بالی وڈ کی سٹار اداکارہ کنگنا رناوت نے ایک اور پنڈورا بکس کھول دیا ہے . کنگنا کا کہنا ہے کہ ہندی فلم انڈسٹری کے بجائے تلگو فلم انڈسٹری پہلے نمبر پر آگئی ہے۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اپنے تازہ پیغامات میں کنگنا رناوت نے ایک ساتھ کئی دھماکے کردیے، خود کی روزی روٹی جس صنعت سے کماتی ہیں، اسے ہی ملک کی بہتر انڈسٹری ماننے سے انکار کردیا۔انہوں نے کہا کہ لوگوں کا خیال ہے کہ ’ندی فلم انڈسٹری‘ ملک میں

ٹاپ پر ہے، یہ غلط ہے، میرا دعویٰ کہ’ تلگو فلم انڈسٹری‘پہلے نمبر پر آگئی ہے۔کنگنا رناوت نے بھارتی ریاست اترپردیش (یوپی) کے سخت گیر وزیراعلیٰ یوگی آدیتا ناتھ کے نوئیڈا میں فلمی شہر بنانے کے اعلان کی تعریف کی۔انہوں نے کہا کہ ہمیں فلم انڈسٹری میں بہت سی اصلاحات لانا ہوں گی، ہم بہت سے عوامل کی بنیاد پر تقسیم ہیں، سب سے پہلے ہمیں ایک فلمی صنعت کی ضرورت ہے، جسے ہندوستانی کہہ سکیں، کنگنا کا مزید کہنا ہےکہ وزیراعظم نریندر مودی کو بہت سی صنعتوں، جن کی انفرادی شناخت ہے، کو یکجا کرنا چاہیے تاکہ وہ ایک چھت کے نیچے آجائیں اور ان کی اجتماعی شناخت بن جائے۔فلم انڈسٹری کو مختلف دہشت گردوں سے جیسے خاندانی اجارہ داری، منشیات مافیا، ٹیلنٹ اور مزدور کا استحصال، جنسیاتی، مذہبی، علاقائی اور غیر ملکی فلموں کے قذاقوں سے بچانے کی اشد ضرورت ہے۔ علاقائی فلموں کی بہترین ڈب کو ملکی سطح پر ریلیز کی اجازت ملنی چاہیے لیکن اس کے مقابلے میں ہالی وڈکی ڈب فلم کو ملک بھر میں پیش کرنے کی اجازت مل جاتی ہے جو خطرناک ہے۔