اسلام آباد ( مشرف کاظمی سے) ملک کے کروڑوں عوام پہلے ہی مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں ایسے میں مزید مہنگائی کیا حال کرے گی یہ سوچ کر بھی دل دہل جاتا ہے لیکن ایسا ہونے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے . تازہ ترین اطلاعات کے مطابق بجلی مزید ایک روپے 48پیسے فی یونٹ مہنگی ہونے کا امکان ہے، سینٹرل

پاور پر چیزنگ ایجنسی نے درخواست نیپر اکو دے دی۔ بجلی جنوری کی فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں مہنگی کرنے کی استدعا کی گئی ہے۔اور کہا گیا ہے کہ فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں بجلی کی قیمتوں میں اضافے کیا جائے، سینٹرل پاور پر چیزنگ ایجنسی نے نیپر اکو درخواست دیدی۔سینٹرل پاور پر چیزنگ ایجنسی کے مطابق جنوری میں پانی سے 11.13 فیصد، کوئلے سے 32.09 فیصد ،مقامی گیس سے21.22 فیصدجبکہ درآمدی ایل این جی سے12.29 فیصد بجلی پیدا کی گئی۔ جنوری کے دوران ،فرنس آئل سے 10.28 فیصد ،ایٹمی وسائل سے 8.74 فیصد اور ہائی سپیڈ ڈیزل سے بھی 0.01 فیصد بجلی پیدا کی گئی۔فرنس آئل سے پیدا ہونے والی بجلی کی قیمت 13روپے77 پیسے فی یونٹ جبکہ ڈیزل سے پیدا کی گئی بجلی کی قیمت 22 روپے 83 پیسے فی یونٹ رہی۔ سی پی پی اے کی درخواست پر حتمی فیصلہ نیپرا 25 مارچ کو کرے گی۔