پشاور ( نیوز ڈیسک )خیبر پختونخوا کے وزیر صحت تیمور سلیم جھگڑا نے کہا ہے کہ صوبے میں پولیو مہمات میں تعطل سے بچوں کی قوت مدافعت کم ہونے کے خطرات بڑھ گئے ہیں۔ پولیو مہم کی بحالی کا فیصلہ وفاقی حکومت، معاون اداروں کی مشاورت سے کیا، جبکہ پولیو مہم کے لیے تربیت یافتہ پولیو ورکرز کی 609

ٹیمیں بنائی گئی ہیں۔ مہم کے لیے 594 موبائل، 15فکسڈ ٹیمیں، نگرانی کے لیے167 ایریا انچارج تعینات ہوں گے۔ مہم کے دوران پولیو ورکرز کے لیے سیکورٹی کے خاطرخواہ انتظامات کئے گئے ہیں، جبکہ پولیو ورکرز، سٹاف کو کورونا وباء کے تناظر میں محفوظ ویکسینیشن کی تربیت دی گئی ہے۔ مہم کے دوران سماجی فاصلہ، ضوابط پر سختی سے عملدر آمد یقینی بنایا جائے گا، پولیو ورکرز کو ماسکس، ہینڈ سینیٹائزرز، انفرا ریڈ تھرما میٹرز اور دیگر حفاظتی سامان دیا گیا ہے۔تیمور سلیم جھگڑا نے کہا کہ مشکل حالات میں پولیو مہمات کا انعقاد بچوں کی صحت اور تحفظ کے عزم کی عکاسی ہے، والدین بچوں کو پولیو سے بچانے کے لئے آگے آئیں اور ان مہمات میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔