اسلام آباد( وی او پی نیوز) زائرین کو ہرسال پیش آنے مسائل کے سلسلہ میں اسلام آباد میں وفاقی وزیر مذہبی امور نورالحق قادری کی دعوت پر منعقدہ اجلاس میں تحریک نفاذفقہ جعفریہ نے اس امرپرزوردیا ہے کہ زیارات کیلئے امیروغریب کے فرق سے بالاتر حقائق کوسامنے رکھ کرپالیسی تشکیل دی جائے کیونکہ ہرطبقہ

اورحیثیت کے لوگ زیارات کیلئے جانے کی خواہش رکھتے ہیں۔ ٹی این ایف جے کے ہینڈآوٹ کے مطابق عراق وایران کے مقامات مقدسہ کی زیارات کیلئے جانے والے زائرین کی مشکلات کے حوالے سے ٹی این ایف جے کے نمائندہ خصوصی علامہ راجہ بشارت حسین امامی نے موقف اختیارکیاکہ غیر نمائندہ افراد اور ممنوعہ جماعتوں کے نمائندوں کواہم قومی ومذہبی موضوعات پرہونے سرکاری اجلاسوں میں شرکت کیلئے بلانا حکومتی اعلانات کی نفی اور نیشنل ایکشن پلان کی کھلی خلاف ورزی ہے ۔انہوں نے واضح کیاکہ حج بیت اللہ اورمقامات مقدسہ کی زیارت دوالگ الگ موضوعات ہیں ، حج کی سعادت صاحبان استطاعت پرفرض ہے جبکہ زیارات سے ہرحیثیت کے لوگ شرفیاب ہوتے ہیں ۔ انہوںنے باورکرایاکہ تحریک نفاذفقہ جعفریہ کی جانب سے وزارت داخلہ ، وزارت مذہبی اموراوردیگرحکومتی حلقوں کومتعددبارزائرین کی مشکلات اورانکے حل کیلئے تجاویزسے تحریر طورآگاہ کیا گیاکہ لیکن ان پرتاحال کوئی عملی پیشرفت سامنے نہیں آئی ۔ ٹی این ایف جے نے اجلاس میں وفاقی سیکرٹری مذہبی امورکے توسط سے

حکومت کوتجویزپیش کی کہ زائرین کیلئے کوئٹہ زاہدان ریل سروس بحال کی جائے جو سی پیک کیلئے تقویت کا باعث ہوگی ، زائرین کیلئے بحری جہاز سروس کا دوبارہ آغاز کیا جائے ، ٹیکس ڈیوٹی کم کرکے کم خرچ ہوائی سروس کا آغاز کیا جائے ، تحریک نفاذ فقہ جعفریہ اور مرکزی و صوبائی حکومت کے مابین با اختیار کوآرڈی نیشن کمیٹی کا قیام عمل میں لایا جائے ، محرم اور اربعین حسینی کے موقع پرکوئٹہ تفتان آمدورفت کیلئے کانوائے کی تعداد میں اضافہ کیا جائے اور آمدورفت کا شیڈول بذریعہ میڈیا قبل ازوقت مشتہر کیا جائے ، زائرین کیلئے تمام شرائط و ضوابط اور پالیسی کو مشتہر کیا جائے تاکہ اس کے نقائص کو رائے عامہ کے ذریعے دور کرنے میں مدد مل سکے ،، تفتان میں زائرین کیلئے سہولتوں میں اضافہ کیا جائے ، ائر ایمبولینس کا انتظام بھی کیا جائے ، زائرین کے مسائل کیلئے شکایتی سیل قائم کیا جائے .