لاہور ( مانیٹرنگ ڈیسک ) سابق کرکٹر المشہورراولپنڈی ایکسپریس شعیب اختر نے سارو گنگولی کو عمران خان جیسی صلاحیتوں کا مالک لیڈر قرار دے دیا۔ویڈیو شیئرنگ ویب سائٹ پر اپنے پیغام میں شعیب اختر کا کہنا تھا کہ بھارتی کرکٹ بورڈ بی سی سی آئی کی جانب سے سارو گنگولی کو بورڈ کا سربراہ بنانا ایک خوش آئند خبر ہے۔گنگولی

کی کپتانی اور قائدانہ صلاحیتوں کو شعیب اختر نے عمران خان سے تشبیہ دیتے ہوئے کہا کہ سابق بھارتی کپتان میں وہی صلاحتیں ہیں جو پاکستان کی 1992 ورلڈکپ جیتنے والی ٹیم کے کپتان میں تھیں۔ جب 1990 کی دہائی میں پاکستان اور بھارت کے درمیان مقابلہ ہوتا تھا یہ

نہیں لگتا تھا کہ وہ پاکستان کو شکست دے پائیں گے لیکن گنگولی نے پر اعتماد کرکٹ کھیلتے ہوئے پاکستان کو سیریز میں شکست دی۔ عمران خان ٹیلنٹ کو پہچان لیا کرتے تھے اور بطور کپتان یہی صلاحیتیں سارو گنگولی میں بھی تھیں۔سارو گنگولی سے مقابلے کے بارے میں شعیب اختر نے کہا کہ سارو گنگولی پُل یا ہُک شاٹ نہیں کھیل سکتے تھے، جس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے میں نے متعدد مرتبہ گیندیں ماریں۔اسپیڈ اسٹار نے انکشاف کیا کہ سارو گنگولی ان سے ڈرتے نہیں تھے، کیونکہ اگر وہ ڈرتے تو کبھی بھی نئی گیند کے خلاف وہ میرا سامنا کرنے کے لیے اوپننگ نہ کرتے۔جیسے ہی سارو گنگولی بھارتی ٹیم کے کپتان بنے تو ٹیم میں نئے چہرے سامنے آئے اور ایک طاقت ور نظام ترتیب پایا، انہوں نے ہی بھارتی کرکٹ کی سوچ کو تبدیل کیا۔۔دوسری جانب ٹوئٹر پر اپنے پیغام میں وریندر سہواگ نے گنگولی کو کرکٹ بورڈ کا چیئرمین منتخب ہونے پر مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ ’’دیر ہے اندھیر نہیں‘‘۔ یہ بھارتی کرکٹ کے لیے ایک مثبت اقدام ہے۔