لاہور ( وی او پی نیوز )یہ جان کر آپ سب حیران ہو گئے ہونگے کہ ایک دوسرے کو دھمکیاں دینے والے آپس میں خط و کتابت کیسے کر سکتے ہی لیکن ایسا ہوا ہے .قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے وزیراعظم عمران خان کو خط لکھ کر چیف الیکشن کمشنر کی تقرری کے لیے 3 نام بھجوا دیئے ہیں۔ خط میں چیف الیکشن کمشنر کے لیے ناصر محمود کھوسہ، جلیل عباس جیلانی اور

اخلاق احمد تارڑ کے نام بھجوائے گئے ہیں اور کہا گیا ہے کہ یہ شخصیات چیف الیکشن کمشنر کے منصب کے لیے مناسب اور اہل ہیں۔ چیف الیکشن کمشنر کا تقرر کرنے کے لیے یہ 3 نام زیر غور لائے جائیں، امید ہے آپ کی طرف سے جلد جواب ملے گا۔شہبازشریف نے خط میں بتایا ہے کہ 6 دسمبر کو چیف الیکشن کمشنر کی 5 سال کی آئینی مدت مکمل ہو رہی ہے اور الیکشن کمیشن کے 2 ارکان کے منصب بھی تاحال خالی ہیں۔الیکشن ایکٹ کےتحت الیکشن کمیشن کا بینچ کم ازکم 3ارکان پر مشتمل ہونا چاہیے۔ چیف الیکشن کمشنر اور ایک یا ایک سے زائد ارکان کا تقرر نہ ہوا تو الیکشن کمیشن غیر فعال ہوجائے گا لہذا وزیراعظم اپوزیشن لیڈر سے مشاورت کریں۔