اسلام آباد( مشرف کاظمی سے)تحریک نفاذ فقہ جعفریہ صوبہ پنجاب کے ناظم الامور حجة الاسلام سید محسن علی ہمدانی نے کہا ہے کہ سیاست دین کے تابع ہے اور دین و مذہب کو سیاسی مفادات کیلئے استعمال کرنےوالوں نے دین و وطن کو بے حد نقصان پہنچایا ہے،حکومت موسوی امن فارمولے پر عمل کرتے

ہوئے مکتبی و فرقہ وارانہ پلیٹ فارم سے عملی سیاست کو ممنوع قراردے اور سیاسی جماعتوں کی طرح مذہبی جماعتوں کا بھی بے رحمانہ احتساب کیا جائے تاکہ قوم کو معلوم ہو سکے کہ راتوں رات ریئس ہونےوالوں کی ڈوری کہاں سے ہلتی ہے،حب الوطنی ایمان ہے لہٰذا وطن کے کفن فروشوں کے خلاف فوری اور سخت کاروائی وقت کی اہم ترین ضرورت ہے۔ عقیدہ و طن پر ہر گز کو ئی آنچ نہیں آنے دیں گے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ٹی این ایف جے ضلع اسلام آباد کے زیراہتمام دانشگاہ باب العلم میں منعقدہ کانفرنس سے صدارتی خطاب کرتے ہوئے کیا جسکا اہتمام شہدائے حسینی محاذ صفدر علی

نقوی ،اشرف علی رضوی راولپنڈی اوراسلام آبادسیکرٹریٹ کے سامنے ملت جعفریہ کے حقوق کیلئے 80ءمیں جام شہادت نوش کرنےوالے محمد حسین شادآف شور کوٹ کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے کیا گیا تھا ۔ٹی این ایف جے ضلع اسلام آباد کے صدر علامہ بشارت حسین امامی نے کانفرنس میں سپاس نامہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کیس کے فیصلے پر قائد ملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاہ موسوی کا موقف حق کی آواز ہے کیونکہ دنیا کا کوئی مذہب حرمت انسانی کی پامالی کو درست نہیں مانتا۔انہوں نے تمام بزرگان قوم سے اپیل کی کہ وہ ملک پر آمریت اور مارشل لاﺅں کے تسلط کا سبب بننے والے مخصوص سیاسی خاندانوں سے عملی بیزاری کریں اور محب وطن قوتیں ایک پلیٹ فارم پر یکجا ہوکر عساکر پاکستان کی پشت پر کھڑی ہوجائیں ۔چیئرمین ٹی این ایف جے پولیٹکل سیل ذوالفقار علی راجہ نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کا ریکارڈ ہے کہ ہم ہر دور میں ہمیشہ کلمہ حق کہتے اور دین و شریعت کو ہر شے پر ترجیح دیتے ہیں ۔ کانفرنس سے پروفیسر غلام عباس،علامہ فخر عابدی ،اسد علی حیدری اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔