لاہور ( طیبہ بخاری )حکومت کی جانب سے پنجاب میں ایک بار پھر تبدیلی کا عمل شروع ہوا ہے اور اس بار بھی پرفارمنس پہ سمجھوتہ نہ کرنے کا عزم دہرایا گیا ہے.پنجاب میں اعلی سطح پر تبدیلیاں کی گئی ہیں چونکہ ماضی میں ان اعلی عہدوں پر تبادلے ذرا کم دیکھنے کو ملتے تھے اس لئے عوام اور انتظامیہ کو ایسی خبریں سننے اور برداشت کرنے کی عادت نہیں تھی

لیکن جب سے عمران خان برسر اقتدار آئے ہیں وہ پنجاب پر خاص نظر رکھے ہوئے ہیں یہی وجہ ہے کہ پنجاب میں اعلیٰ عہدوں پر تبادلوں کا سلسلہ بڑھا ہے . نئے احکامات کے تحت صوبائی حکومت نے چیف سیکریٹری پنجاب یوسف نسیم کھوکھر کو عہدے سے ہٹاکر ان کی جگہ وفاقی سیکریٹری داخلہ میجر (ر) اعظم سلیمان کو تعینات کردیا ہے۔نئے چیف سیکریٹری پنجاب کی تعیناتی کا نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا ہے۔ پنجاب حکومت نے عہدے سے ہٹائے گئے سابق چیف سیکریٹری یوسف نسیم کھوکھر کی خدمات وفاق کے سپرد کرنے کا فیصلہ کیا ہے،یہ بھی قابل توجہ بات ہے کہ یوسف نسیم کھوکھر کو وفاق میں ذمہ داریاں دیے جانے کا امکان ہے۔دوسری جانب اسپیشل سیکریٹری داخلہ میاں وحید الدین کو میجر (ر) اعظم سلیمان کی پنجاب منتقلی کے بعد سیکریٹری داخلہ لگائے جانے کا امکان ہے۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ چیف سیکریٹری پنجاب کی تبدیلی کا فیصلہ وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ پنجاب کی ایک ہی دن میں دو ملاقاتوں کے دوران کیا گیا. ان تبادلوں پر شور شائد اسی وجہ سے ہے .