ایران نے اسرائیل پر حملہ کر دیا ،سائرن بج گئے، سلامتی کونسل کا ہنگامی اجلاس آج طلب ، پاکستان نے کیا رد عمل دیا ؟ اب تک کی تمام اہم ترین تفصیلات جانیے

Spread the love

لاہور ( طیبہ بخاری سے) ایران نے ایران کا اسرائیل پر حملہ کر دیا، ایران نے دمشق میں ایرانی قونصل خانے پر حملے کا جواب دے دیا۔ایران نے اسرائیل پر ڈرون اور کروز میزائلز سے حملے کیے ہیں، 50 فیصد اہداف کو نشانہ بنانے کا دعویٰ کیا ہے۔اسرائیل کے مختلف علاقوں میں رات گئے سائرنز بج گئے، اسرائیل نے کئی ایرانی ڈرونز اور میزائلز کو تباہ کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔اسرائیل فوج کے ترجمان نےکہا ہے کہ ایران نے 200 سے زائد ڈرونز اور میزائل داغے، ایرانی حملوں میں 1 لڑکی زخمی اور ایک فوجی تنصیب کو معمولی نقصان پہنچا ہے۔امریکی سیکیورٹی ذرائع نے اردن کی سرحد پر متعدد ایرانی ڈرونز کو تباہ کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔اردن کے جیٹ طیاروں نے بھی شمالی اور وسطی اردن سے اسرائیل کی طرف جاتے درجنوں ایرانی ڈرونز مار گرائے۔ادھر برطانیہ نے بھی کئی جنگی اور ری فیولنگ ٹینکر طیارے خطے میں بھیج دیے، برطانوی حکومت کے مطابق طیاروں کو فضائی حملے روکنے کے لیے بھیجا گیا ہے۔

دوسری جانب اسرائیلی فوج نے دعویٰ کیا ہے کہ ایران کے داغے گئے 99 فیصد ڈرون اور میزائلوں کو تباہ کر دیا گیا ہے۔اسرائیلی وزیرِ دفاع کا کہنا ہے کہ ایران نے 300 سے زائد پروجیکٹائل اسرائیل کی طرف داغے، بیلسٹک میزائلوں کی معمولی تعداد اسرائیلی سر زمین تک پہنچ سکی۔ اسرائیل کے انتہائی دائیں بازو کے نیشنل سیکیورٹی وزیر اتمار بن گویر نے کہا ہے کہ اب ایران کے خلاف کچلنے والے حملے کی ضرورت ہے۔اتمار بن گویر نے ایرانی حملے کے خلاف اسرائیلی فوجی دفاع کو سراہا۔

یہاں ہم آپ کو یہ بھی بتاتے چلیں کہ ایران نے وارننگ دی ہے کہ اگراسرائیل نے جوابی کارروائی کی تو جواب اس سے بھی بھرپور ہو گا،ایک بیان میں اقوامِ متحدہ میں ایرانی سفیر نے کہا ہے کہ اسرائیل نے دوبارہ جارحیت کی تو ایران کا جواب فیصلہ کن طور پر بھرپور ہو گا۔

علاوہ ازیں ایران کے اسرائیل پر حملے کے بعد اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل نے ہنگامی اجلاس آج طلب کر لیا ہے۔اسرائیل کی درخواست پر سلامتی کونسل کا اجلاس پاکستانی وقت کے مطابق رات 1 بجے ہو گا۔اسرائیل نے صدر سلامتی کونسل کو خط میں کہا ہے کہ ایران کا حملہ عالمی امن، سیکیورٹی کے لیے بڑا خطرہ ہے۔ایران نے جوابی خط میں کہا کہ ایران کا اقدام عالمی قوانین کے عین مطابق تھا۔

اور اب بات کریں ایران اور اسرائیل  کشیدگی کے حوالے سےپاکستان کے ردعمل کا ذکر کریں تو پاکستان نے ایران اسرائیل کشیدگی پر ردِ عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کو مشرقِ وسطیٰ کی صورتِ حال پر گہری تشویش ہے۔اس حوالے سے ترجمان دفترِ خارجہ کا کہنا ہے کہ پاکستان صورتِ حال کا تشویش کے ساتھ جائزہ لے رہا ہے، پاکستان نے کئی مہینوں سے بین الاقوامی کوششوں کی ضرورت پر زور دیا تھا۔ترجمان کا کہنا ہے کہ پاکستان نے کہا تھا خطے میں دشمنی کو روکا اور غزہ میں سیز فائر کیا جائے، تازہ واقعات سفارت کاری کی ناکامی کا اظہار ہیں۔ یہ واقعات سنگین اثرات رکھتے ہیں، یہاں بھی اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل بین الاقوامی امن و سلامتی قائم رکھنے میں ناکام ہوئی۔دفترِ خارجہ کی ترجمان کا کہنا ہے کہ اب صورتِ حال مستحکم کرنے اور امن کی بحالی کی اشد ضرورت ہے، تمام فریقین تحمل سے کام لیں اور کشیدگی کم کرنے کی طرف بڑھیں۔

Tayyba Bukhari

Learn More →

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: