لوڈشیڈنگ کے سبب کوئی انتقال ہوا تو ایف آئی کس کیخلاف ہو گی؟ ناصر شاہ نے بڑا اعلان کر دیا

Spread the love

کراچی ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) سندھ کے وزیر ناصر حسین شاہ کا کہنا ہے کہ ہیٹ ویو میں لوڈ شیڈنگ کے سبب کوئی انتقال ہوا تو کے الیکٹرک کے خلاف ایف آئی آر درج ہو گی۔سندھ اسمبلی کے اجلاس میں صوبائی وزیر ناصر حسین شاہ نے اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ 22 سے 27 مئی ہیٹ ویو ہے، ہم نے اقدامات کر رکھے ہیں، تمام محکموں کو الرٹ رہنے کی ہدایت دی ہے۔ انرجی کے محکمے میں جتنے عملے کی ضرورت تھی اتنے ہی تھے، سب بھرتیاں میرٹ پر ہو رہی ہیں۔”جنگ ” کے مطابق رکنِ اسمبلی ایم کیو ایم محمد مظاہر عامر نے وقفۂ سوالات میں اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ 80 سے 85 فیصد ریکوری والے علاقوں میں بھی لوڈ شیڈنگ ہو رہی ہے، کیا کے الیکٹرک سے رجوع کریں گے؟

 

file photo

صوبائی وزیر ناصر حسین شاہ نے ایوان میں جواب دیا کہ میں متفق ہوں، لوڈ شیڈنگ بہت سارے علاقوں میں غیر اعلانیہ ہو رہی ہے، ہم نے وزیرِ اعلیٰ سندھ کے ساتھ وفاقی حکومت سے اس حوالے سے ملاقات بھی کی ہے۔ملاقات میں بتایا ہے کہ کے الیکٹرک، حیسکو اور سیبکو کے کئی فیڈرز دنوں تک بند رہتے ہیں، کے الیکٹرک میں مزید مسائل بھی ہیں، ان پر بھی بات کی ہے۔ سعید غنی نے کے الیکٹرک کی زیادتیوں کے خلاف جمعے کو ملاقات رکھی ہے، دیگر اراکین کو بھی دعوت دیتا ہوں، اپنی نمائندگی اس میٹنگ میں کریں، اوور بلنگ اور غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کا خاتمہ ہونا چاہیے۔ میڈیا پر خبریں چلیں تو سیکریٹری انرجی کو کہا کہ امتحانات میں لوڈ شیڈنگ نہ ہو، کے الیکٹرک سے بات کی، چیک کیا امتحانات میں اب لوڈ شیڈنگ نہیں ہو رہی۔

ناصر حسین شاہ نے کہا کہ 2 لاکھ گھروں کے لیے سولر کا پروگرام ورلڈ بینک کی سپورٹ سے شروع کیا ہے، 2 لاکھ میں سے 322 لوگوں نے تفصیلات شیئر کی ہیں، انہیں سولر پینل لگا کر دیئے ہیں۔ کراچی ہمارے لیے دل کی طرح ہے، شہر میں کافی عمارتیں سولر پینل پر ہیں، حیدر آباد میں بھی بہت ساری جگہوں پر سولر پینلز لگائے ہیں، مزید کام ہو رہا ہے۔حیدر آباد میں لمس اسپتال کو سولرائز کیا گیا ہے، سندھ پروونشل میوزیم کو بھی سولرائز کیا گیا ہے، اداروں کو سولر پر لے جایا جائے تو اس کا فائدہ ہی ہو گا۔

Tayyba Bukhari

Learn More →

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: