پاکستان اور بھارت میں کس کے پاس زیادہ ایٹمی ہتھیار ہیں ۔۔۔؟غیر ملکی تحقیقاتی ادارےنے تہلکہ خیز انکشاف کر دیا

Spread the love

سٹاک ہوم(مانیٹرنگ ڈیسک) سویڈن کے تحقیقاتی ادارے کی رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ بھارت کے ایٹمی ہتھیاروں کی تعداد پاکستان سے زیادہ ہوگئی ہے۔بی بی سی کی رپورٹ کے مطابق سٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹی ٹیوٹ (سیپری) نے اپنی تازہ سالانہ رپورٹ میں دعویٰ کیا ہے کہ گزشتہ سال بھارت کے پاس اندازاً 164 جوہری وار ہیڈز تھے، اس

سال یہ تعداد بڑھ کر 172 ہو چکی ہے،دوسری جانب پاکستان کے پاس موجود جوہری وارہیڈز کی تعداد بنا کسی اضافے کے 170 ہے،پاکستان بھارت کا مقابلہ کرنے کے لیے جوہری ہتھیار تیار کر رہا ہے جب کہ بھارت کی توجہ طویل فاصلے تک مار کرنے والے ہتھیاروں کی تعیناتی پر مرکوز ہے، ایسے ہتھیار جو چین کو بھی نشانہ بنا سکیں،بھارت اور پاکستان کے پڑوسی اور دنیا کی تیسری بڑی جوہری طاقت چین کے پاس موجود جوہری ہتھیاروں کی تعداد 22 فیصد اضافے کے ساتھ 410 وار ہیڈز سے بڑھ کر 500 ہوگئی ہے۔سیپری کا کہنا ہے کہ سال 2024 میں9 ممالک امریکہ، روس، برطانیہ، فرانس، چین، بھارت، پاکستان، اسرائیل اور شمالی کوریا کے پاس مجموعی جوہری ہتھیاروں کی تعداد کم ہو کر تقریباً 12 ہزار 121 ہوگئی ہے۔ پچھلے سال یہ تعداد 12 ہزار 512 تھی۔

Tayyba Bukhari

Learn More →

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: