49

ہاتھ باندھ کر مزے سے نہیں بیٹھے، معاشی صورتحال بہتر ہے، ڈیفالٹ جیسی باتیں نہ کی جائیں: سٹیٹ بینک

Spread the love

اسلام آباد ( کامرس نیوز ) سٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) حکام نے پاکستان کی معاشی صورتحال بہتر قرار دے دی اور کہا ہے کہ عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) پروگرام پر تمام سیاسی جماعتیں متفق ہیں۔اسلام آباد سے جاری بیان میں سٹیٹ بینک حکام نے کہا کہ پاکستان کی معاشی صورتحال بہتر ہے، ڈیفالٹ جیسی باتیں نہ کی جائیں۔ آئی ایم ایف پروگرام پر تمام سیاسی جماعتیں متفق ہیں، آئی ایم ایف کے بغیر اگلا سال بہت مشکل ہوگا۔حکومت نے تمام مشکل

فیصلے کرلیے ہیں، آئی ایم ایف پروگرام میں رہیں گے تو بیرونی فنانسنگ کا مسئلہ نہیں ہوگا۔ ایکسچینج ریٹ پکڑ کر رکھیں گے تو زرمبادلہ کے ذخائر مزید گریں گے، سٹیٹ بینک ہاتھ باندھ کر مزے سے نہیں بیٹھا، ضرورت کے مطابق مداخلت کرتے ہیں۔ایس بی پی حکام کے مطابق آئی ایم ایف سے کہا ہے ایگزیکٹو بورڈ سے معاہدے کی جلد منظوری لی جائے، 15 اگست کے بعد بورڈ سے قسط کی فوری منظوری کا یقین دلایا ہے۔حکام کے مطابق اس مالی سال مہنگائی کا تخمینہ 18 سے 20 فیصد ہے، پاکستان کا بیرونی قرضہ پائیدار ہے، گھبرانے کی ضرورت نہیں۔اسٹیٹ بینک حکام کے مطابق ضمنی انتخابات کے نتائج سے سیاسی بے یقینی بڑھی ہے، موجودہ بے یقینی فروری 2022 کے مقابلے میں کم ہے۔ایس بی پی حکام کے مطابق فروری میں فیول سبسڈی کے اعلان سے آئی ایم ایف ناراض تھا، موجودہ معاہدے کے بعد ہمیں پتا ہے کہ کیا کرنا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں