24

بھارت کا پاکستان کو ایف سولہ طیاروں کے پرزے فروخت کرنے پر امریکہ سے احتجاج

Spread the love

دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت نے پاکستان کو F-16 طیاروں کے پرزے فروخت کرنے پر امریکا سے احتجاج کیا ہے۔بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی وزیر دفاع راج ناتھ نے امریکی ہم منصب سے فون پر بھارت کے تحفظات کا اظہار کیا ہے۔ راج ناتھ کے مطابق امریکی وزیر دفاع لائیڈ آسٹن سے فون پر گفتگو میں پاکستان کو F-16 طیاروں کے پرزے فروخت کرنے کے امریکی فیصلے پر بھارت کے تحفظات بتائے ہیں۔اس سے قبل گزشتہ ہفتے بھارتی وزارت خارجہ نے بھی امریکی نائب سیکرٹری خارجہ ڈونلڈ لو سے بھی پاکستان کو 45 کروڑ ڈالرکا ملٹری پیکج دینے پر احتجاج کیا تھا۔خیال رہے کہ امریکی محکمہ خارجہ نے پاکستان کو F-16 طیاروں کی مرمت کے لیے سامان اور آلات فروخت کرنیکی منظوری دے دی ہے۔پینٹا گون کے بیان کے مطابق امریکی محکمہ خارجہ نے 45 کروڑ ڈالرکے معاہدے کی منظوری دی ہے۔ علاوہ ازیں سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے بھارتی وزیر خارجہ ڈاکٹر ایس جے شنکر نے ملاقات کی ہے اور انھیں وزیر اعظم نریندر مودی کا خط پہنچایا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق سعودی وزارت خارجہ(ایم او ایف اے)کے ایک بیان کے

مطابق بھارتی وزیرخارجہ اور ولی عہد نے دو طرفہ تعلقات کو آگے بڑھانے پر تبادلہ خیال کیا اور علاقائی اوربین الاقوامی پر ہونے والی پیش رفت سے نمٹنے کے لیے کی جانے والی کوششوں پر بات چیت کی۔اس ملاقات میں سعودی وزیرخارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان،نئی دہلی میں مملکت کے سفیرصالح الحسینی اور بھارتی وزیرخارجہ کے دفتر کے اسسٹنٹ انڈرسیکرٹری ڈاکٹر شیلبک امبولے بھی موجود تھے۔سعودی وزارت خارجہ کے مطابق ڈاکٹرایس جے شنکر نے شہزادہ فیصل سے الگ سے بھی ملاقات کی ہے۔اس میں دوطرفہ تعلقات کوبڑھانی اوربین الاقوامی امن و سلامتی کو بہتر بنانے کے لیے مل جل کام کرنے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔سعودی وزارتِ خارجہ نے ایک بیان میں کہا کہ شہزادہ فیصل کی قیادت میں سعودی وفد نے سعودی انڈین اسٹریٹجک پارٹنرشپ کونسل کی کمیٹی کا اجلاس منعقد کیا۔اس میں سیاست، سلامتی، ثقافتی اور سماجی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔دونوں وفود نے مبینہ طور پرمملکت کے ویژن 2030اور دوطرفہ سرمایہ کاری میں اضافے کے مطابق موجودہ اقتصادی شراکت داری کو مستحکم کرنے کے طریقوں پر بات چیت کی ہے۔بھارتی وزارتِ خارجہ نے یہ بھی واضح کیا ہے کہ دونوں ملکوں کے مختلف گروپوں اوراعلی عہدے داروں کے درمیان گذشتہ چند ماہ کے دوران میں کئی ایک ملاقاتیں ہوئی ہیں۔ڈاکٹر جے شنکر کا وزیرخارجہ کی حیثیت سے مملکت کا پہلا دورہ ہے۔سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ میں انھوں نے اس دورے کویادگارقراردیا۔سعودی عرب اور بھارت کے وزرا خارجہ کے درمیان آخری ملاقات جولائی میں انڈونیشیا کے شہر بالی میں جی 20 اجلاس کے موقع پر ہوئی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں