90

قومی اسمبلی ،سپیکر نے عدم اعتماد کی تحریک مسترد کر دی

Spread the love

اسلام آباد ( وی او پی نیوز )ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی قاسم سوری نے فواد چوہدری کے عدم اعتماد تحریک پر اٹھائے گئے آئینی اعتراضات کو تسلیم کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد کو آئین کے منافی قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا اور رولنگ جاری کر دی ۔اجلاس کے آغاز میں وفاقی وزیر فواد چودھری نے نکتہ اٹھایا کہ 7 مارچ 2022 کو ہمارے سفیر کو ایک میٹنگ میں طلب کیا جاتا ہے جہاں انہیں بتایا جاتا ہے کہ پاکستان میں عدم

اعتماد کی تحریک آ رہی ہے ، اگر یہ کامیاب نہیں ہوتی تو پاکستان کا آئندہ کا راستہ بہت مشکل ہوگا ، اس سے اگلے دن 8 مارچ 2022 کو پاکستان میں عدم اعتماد کی تحریک آجاتی ہے ۔فواد چودھری نے کہا کہ جناب سپیکر غیر ملکی طاقتوں کی ایماء پر تحریک عدم اعتماد آئین کے منافی ہے ۔قائم مقام سپیکر قاسم سوری نے رولنگ دی کہ فواد چودھری کا پوائنٹ درست ہے ، غیر ملکی طاقتوں کی ایماء پر تحریک عدم اعتماد کی قرارداد آئین کے منافی ہے ، لہذا میں اسے مسترد کرنے کی رولنگ دیتا ہوں ۔
یہاں ہم آپ کو یہ بھی بتاتے چلیں کہ قومی اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کیلئے آتے ہوئے وفاقی وزیرِ اطلاعات ونشریات فواد چوہدری نے کہا تھا کہ جنہوں نے شیروانیاں سلوائی ہیں انہیں پاجامے نہیں ملنے۔پارلیمنٹ ہاؤس پہنچنے پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے صحافی کے سوال کے جواب میں کہا کہ سرپرائز پہلے بتا دوں تو کیا فائدہ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں